Skip to main content

نشیلی چوت کا رس

بات ان دنوں کی ہے جب میں ہائی سکول کی بورڈ کا امتحان دے کر فری تھا اور نتائج آنے میں تین ماہ کا وقت تھا. یہ وہ وقت ہوتا ہے جب ہر لڑکا اپنے بڑھے ہوئے لنڈ کے فی اكارشت رہتا ہے، ساتھ - ساتھ بڑھتی ہوئی کالی - کالی گھگھرالي جھاٹے اس کا دل جلدی سے کسی نشیلی چوت کا رس پان کرنے کو حوصلہ افزائی کرتی ہیں. میں نے فری ٹائم کو صحیح استعمال کرنے کے لئے ایک انگریزی سپیکنگ کورس جوان کر لیا. ہمارے گھر سے تھوڑی دور پر ایک نیا انگریزی کوچنگ سینٹر کھلا تھا جہاں میں اپنا اےڈميشن لینے پہنچ گیا. میرے لؤڑے کی قسمت اچھی تھی وہاں جاتے ہی میرا سامنا ایک کمسن، الہڑ، مدمست، جوان، عورت سے ہوا جو پتہ چلا کہ وہاں کی ٹیچر ہے. اس گورے - گورے تن بدن کو دیکھتے ہی میرا تو لؤڑا چڈڈھي میں ہی اچكنے لگا. اس كھشبودار سانسوں نے من میں طوفان پیدا کر دیا تھا. من تو اس کے فورا چودنے کو کر رہا تھا پر کیا کرتا وہاں تو پڑھنے گیا تھا.

اےڈميشن دیتے ہوئے وہ بھی مجھے آنکھوں ہی آنکھوں میں تول رہی تھی. وہ 27 سال کی بھرے بدن والی میڈم تھی. شادی - شدہ، اس کی دونوں چوچیاں آدھا -2 کلو کی تھی اور اس کے گدیدار موٹے چوتڑ (گاںڈ) ابھار لیے سنگ مر مر کی مورت سے تراشے ہوئے ہلتے ایسے لگتے تھے جیسے کہہ رہے ہوں - آجا بادشاہ اس گاںڈ کو بجا جا!

میں نے اےڈميشن لیکر پوچھا - کتنے بجے آنا ہے میڈم؟

وہ مسکرا کر بولی - صبح سات بجے آنا.

"ساتھ کیا کرنا ہے؟"

"وہ بولی ایک كوپي بس."

میں گھر واپس آ گیا پر ساری رات صبح ہونے کے انتظار میں سو نہ سکا. رات بھر میڈم کی حسین مسکراہٹ اور چہرہ سامنے تھا. میں بار - بار ان کے بلاز میں قید ان دو کبوتروں کا خیال کر رہا تھا جو باہر آنے کو بیتاب تھے. ان کی چوت کیسی ہوگی؟ گلابی چوت پہ سیاہ سگھاڑا ہوگا، ان کی چوت کا لہسن موٹا ہوگا یا پتلا، ملائم میٹھا یا نمکین، کتنا نشہ ہوگا ان کے چوت کے رس میں؟ ان کی بر کی پھاكے گلاب کی پتیوں سی پھیلا دوں تو کیا ہو؟ یہ تصور اور مدہوش کر رہی تھی جس سے میرے لنڈ پھول کر لمبا اور موٹا ہو گیا تھا اور میری چڈڈھي میں اس نے گیلا پانی چھوڑ دیا.

اگلے دن صبح، جلدی سے نہا کر میں انگریزی کی کوچنگ میں وقت سے پہنچ گیا. اس کلاس میں اور بھی کچھ حسین لڑکیاں تھیں. کچھ خوبصورت شادی - شدہ عورتیں بھی تھی جو ہائی کلاس سوسائٹی میں اپنا اثر و رسوخ جمانے کے لیے انگریزی سیکھنا چاہ رہی تھیں تاکہ ہائی کلاس کی رگينيو کا مزا اٹھایا جا سکے. میں پیچھے کی سیٹ پر بیٹھ گیا. تھوڑی دیر میں میڈم وہاں آئی اور گڈ مورنںگ کے ساتھ مجھ پر نظر پڑتے ہی بولی - تم آگے آ کر بیٹھو.

ان کے کہنے پر میں آگے کی سیٹ پر بیٹھ گیا. وہ سب کو اپنا تعارف ہوئے بولی - ہاے میں نشا ہوں. اب آپ لوگ اپنا تعارف دیجیے. ہم سب نے اپنا - اپنا تعارف کرایا. پھر وہ بلیک بورڈ کی طرف مڑ کر لکھنے لگی. جیسے ہی وہ مڑی، ان کی گاںڈ میرے سامنے تھی اور دل پھر ان کی گاںڈ مارنے کے خیال میں کھو گیا. کیا کروں جوانی 18 سال کی کہاں خاموش رہتی.

وہ بہت خوبصورت ہلکے رنگ کی ساڑھی پہنے تھی. گلابی بلاز کے نیچے ان کی کالی برا صاف دکھ رہی تھی. ساڑھی کے پلو سے انکی چوچی کا بارڈر زبان پر پانی لا رہا تھا، لالچ دل میں جگا رہا تھا. دونوں چوچیوں کے بیچ کی گہری لائن برا کے اوپر سے لنڈ کو مستی دلا رہی تھی. وہ مڑ کر واپس کلاس کو بولنے لگی گرامر کے بارے میں اور میرے بالکل پاس چلی آئی. میں بیٹھا تھا اور وہ میرے اتنے قریب کھڑی تھی کہ ان کا کھلا پیٹ والا حصہ میرے منہ کے پاس آ چکا تھا جس سے ان کی گول - گول گہری ناف کی مہک میرے نتھنو میں میٹھا زہر گھول رہی تھی. پھر ان کا پین ہاتھ سے گر کر میرے سامنے ٹپک گیا جسے لینے وہ نیچے جھکی تو دونوں چوچیاں میرے منہ کے سامنے پاس گئے. اس دن کلاس ایسے ہی چلتا رہا. پھر جب کلاس ختم ہوا تو جب سب چلنے لگے تو میڈم نے مجھے رکنے کو کہا. میں اپنی کرسی پر بیٹھا رہا.

سب کے چلے جانے کے بعد میڈم میرے پاس آئی اور بولی - هےڈسم لگ رہے ہو!

میں نے کہا - تھینک یو!

"تم ابھی کیا کرتے ہو؟"

میں بولا - ابھی ہائی سکول کا امتحان دیا ہے، اب میں فری ہوں.

میڈم بولی - مطلب اب تم بالغ ہو گئے ہو.

یس میڈم، میں بولا.

هووووم ...... وہ کچھ سوچ کر بولی - تمہارا كےلا تو کافی کافی بڑا ہے!

كےلا؟؟؟ میں سمجھ تو گیا تھا کہ میڈم میرے لنڈ کی طرف اشارہ کر رہی ہیں پر میں اںجان بنا رہا.

میں نے پوچھا - کس کیلے کی بات کر رہی ہیں آپ؟

ارے! اب اتنے اںجان مت بنو میرے بادشاہ، تمہارا لؤڑا جو کافی بڑا ہے اور جو اس پینٹ کے نیچے سے پھول کر باہر ہوا کھانے کو بے تاب ہے. شاید اس نے ابھی تک گجھيا (چوت) کا مزہ نہیں چکھا. اصل میں میں کلاس جلدی پہنچنے کے چکر میں نہا کر پتلون کے نیچے انڈرویئر پہننا بھول گیا تھا جس سے موٹا لؤڑا تن کر پیںٹ میں اپنی چھاپ دکھا رہا تھا.

میڈم کو فری اور فرےك ہوتا دیکھ کر میں نے بھی کہہ دیا - ہاں میڈم، ابھی تک کسی کی چوت کا مزہ نہیں چکھا ہے.

وو بولی - آج کی صبح چھ بجے میرے گھر آ سکتے ہو؟ میں اکیلی رہتی ہوں. دراصل میرے شوہر نیوی میں ہیں اور ہمارے کوئی اولاد نہیں ہے. تم آ جاؤ گے تو مجھے کمپنی ہو گی.

میں نے فورا حامی بھر دی. میں جانتا تو تھا کہ میڈم کو میری کمپنی کیوں چاہیے تھی. ان کو اپنی بر کی کھجلی مٹاني تھی اور پھر جب شوہر نیوی میں گاںڈ مرايے تو بیوی دن بھر جب ٹيچگ سے لوٹ کر آئے تو چوت چودنے کو کوئی لؤڑا تو چاہیے ہی. اس میں کچھ غلط نہیں ہے. ہر عورت کی، ہر لونڈیا کی چوت میں گرمی چڑھتي ہے اور اس کی چوت کی آگ صرف اور صرف لنڈ ہی ٹھنڈا کر سکتا ہے.

ساری رات میڈم کا خیال کر میں سو نہ سکا. صبح گھڑی میں الارم لگا دیا 5 بجے کا. ممی بھی صبح الارم کی آواز سے اٹھ گئی اور بولی - اتنی صبح کہاں جا رہے ہو؟؟

میں نے کہا - صبح روز اب میں جلدی اٹھ کر جوگگ کرنے جاںگا اور پھر وہیں سے کلاس اٹینڈ کر پیچھے اگا.

اب ان سے کیا کہتا کہ میڈم کی چوت کی کھجلی دور کرنے جا رہا ہوں. صبح چائے پی کر میں فورا ٹیکسی کر میڈم کے پتے پر كوپي لئے پہنچ گیا. ڈوربےل بجائی تو تھوڑی دیر بعد میڈم کالی نائیٹی پہنے مسکرا کر دروازہ کھولتی نظر آئی ان نائیٹی کے دو بٹن اوپر کے کھلے تھے اور برا نہیں پہنے ہونے کے کارن دونوں چوچیاں مجھے صاف دکھائی دے رہی تھیں. نیچے پیٹیکوٹ بھی نہیں تھا کیونکہ انہوں نے میرا ہاتھ کمر پر رکھ مجھے اندر بلایا جس سے ان کا بدن میرے ہاتھ میں آ گیا تھا.

سامنے کھلا ہوا سینہ میرے دل کی دھڑکن بڑھا رہا تھا. وہ مسکرا کر بولی - اب ایسے ہی کھڑے - کھڑے میری صورت دیکھتے رہو گے یا مجھے اپنی باہوں میں اٹھا کر بستر پہ بھی لے چلوگے. میری جوانی کب سے موٹے لنڈ کی آگ میں جل رہی ہے، میری جوانی کے مزے نہیں لوٹوگے؟؟؟

میں نے فوری طور كوپي پاس پڑی میز پر پھینک دی اور میڈم کو جھٹ سے اپنی باہوں میں اٹھا لیا. ان کے کھلے بال میرے ہاتھ پر تھے اور انہوں نے میرے ہونٹوں کو اپنے لبوں میں قید کر لیا. ان کا بیڈروم سامنے ہی تھا. موسم تھوڑا گرم تھا اس لیے میں ان کو پہلے باتھ روم میں لے آیا جہاں ان کو تھوڑا نهلا کر مالش کر گرم کر سکوں.

میں نے میڈم کو باتھ روم میں کھڑا کر دیا اور پھر ان کی کالی نائیٹی کے اوپر سے مکمل ماںسل بدن دبایا پھر سہلایا. ان کے ہاتھ اوپر کر ان کی کالی نائیٹی دھیرے سے اتار دی. اب وہ پوری ننگی میرے سامنے کھڑی تھی. دودھيا بدن گوری - گوری - موٹی چوچیاں اور ہلکے سیاہ گھگھرالے بالوں کے درمیان گلابی ملائم چوت. میں نے شور شروع کر دیا. پانی اوپر سے نیچے ہر حصہ کو بھگو رہا تھا. میں نے ان کو چومنا چاٹنا شروع کر دیا. ہونٹوں سے ہونٹ پھر گال سب پر زبان پھیر کر مزا دیتا گیا. دونوں چوچیاں بار بار دبا کر نپپلو کو مںہ میں بھر لیا. ان گلابی چچوك موٹے اور بہت نرم تھے. زبان نکال کر گول - گول نپل پر گھما کر چاٹ کر پیا. وہ آ گیا بولی - اور پیو! یہ نپل کب سے ترس رہے تھے کہ کوئی ان کو پیے.

میں نے کس کر چوچی مردن کیا، دبا دبا کر نپپلو کو اكےر کر دونوں نپپلو پر زبان سے خوب کھجلی کی. میڈم بھی اپنی زبان نکال کر میرے زبان کے ساتھ اپنے نپپلو چاٹ رہی تھی. ان کی چوچیاں پھول کر بڑا ہو گیا تھا اور میں نیچے ان کی ناف پر آ گیا تھا. گول ناف کی گہرائی ناپنے میں 2 منٹ لگے. اس سے پہلے چوچیوں کا مساج اور نپپلو کو چوس کر دس منٹ تک ان کو پیار کے نشے میں ڈباتا چلا گیا. اس عمل سے میرا لؤڑا بھی ناگراج کی طرح پھفكارتا ہوا کھڑا ہو کر سات انچ کا ہو چکا تھا جس پر میڈم کا ہاتھ پہنچ گیا تھا. میں نے دھیرے سے میڈم کو باتھ روم کے فرش پر لٹايا تاکہ ان کی چوت کھل کر میرے سامنے آ سکے اور میں ان کی گلابی گجھيا میں انگلی ڈال سکوں.

میں ان کی چوت کا رس پینے کے ارادے سے نیچے گیا. ان کی جھانٹوں پر پڑی پانی کی بودو نے مجھے ان کے جھانٹوں پر چاندی کی طرح چمکتی بودو کو پینے کی چاہ جگا دی. میں ان کی کالی، ملائم گھگھرالي جھانٹوں کو اپنے ہوںٹھوں میں قید کر اپنے ہوںٹوں سے پینے لگا. ان کی جب جھاںٹیں کھںچتی تو وہ اههههههههه ...... اوووهههه ... ههها ....... ज्जज्जजाआअन्न्नन्न .. سسسسسسس ... کرتی جس سے میرا لنڈ اور کڑک ہو جاتا.

ان کی جھانٹوں سے پانی صاف کرنے کے بعد میں نے دونوں انگلیوں سے ان کی چوت کی گہرائی کو ناپا. مطلب دونوں انگلیاں اندر گلابی چھید میں ڈال دی گہرائی تک. پھر زبان پاس لا کر ان کے چوت کا سگھاڑا اپنے منہ میں قید کر لیا.

تقریبا دس منٹ تک ان نشیلی چوت کا رس اپنی زبان سے پیتا رہا اور ان کی گرم چوت میں اپنی زبان چلاتا رہا. اوپر سے نیچے، پھر نیچے سے اوپر اور پھر زبان کو سخت کر اندر باہر بھی. زبان سے چوت رس چاٹتے وقت میں نے ایک انگلی نیچے خوبصورت سے نظر رہے گاںڈ کے چھید پر لگا دی. ان کو تیار کر میں نے اپنا اںڈرویر اتارا جس میڈم باتھ روم کے فرش پر اٹھ کر میرے اوپر میری طرف گاںڈ کر 69 کی پوزیشن میں لیٹ گئی اور میرا لنڈ اپنے مںہ میں ڈال لیا.

میں میڈم کی چوت میں نیچے سے پیچھے سے زبان ڈال کر ان کا رس چاٹے جا رہا تھا اور میڈم کو میرا گلابی سپاڑا بہت مزا دے رہا تھا. وہ بچوں کی طرح اسے چوسے جا رہی تھی. کیونکہ ان کو لنڈ بہت دنوں بعد نصیب ہوا تھا. میرا تنا لنڈ ان کو بہت مزا دے رہا تھا. وہ 5 منٹ تک میرا لؤڑا اپنے ہوںٹھوں میں قید کر چوستی رہی. زبان سے لنڈ کے سپاڑے کو چاٹ - چاٹ کر سرخ کر دیا تھا اور لنڈ تن کر راڈ کی طرح مکمل کھڑا ہو گیا تھا پر میڈم چھوڑ ہی نہیں رہی تھی.

میںنے بولا - میڈم، میں جھڑنے والا ہوں!

تو انہوں نے مجھے کھڑا کر دیا اور خود بھی میرے اوپر سے ہٹ گیا، بولی - آؤ بادشاہ، میری زبان پر گرا دو.

وو میرے لنڈ کے پاس منہ کھول کر زبان نکال کر بیٹھ گئیں. میں نے اپنے ہاتھ سے ہلا کر جلدی سے اپنا سارا گرم گرم شہد ان کی زبان پہ گرایا جسے انہوں نے اپنی آنکھیں بند کر جنت کا مزا لیا. وہ میرے گرم ویرے کی آخری بوند تک چاٹ گئی. پھر انہوں نے اپنا منہ دھویا اور مجھے بولی - اب مجھ کو بیڈروم میں لے چلو، راجہ.

میں بھی ان کی چوت چودنے کو بے تاب تھا.

میں نے ان کو اٹھا لیا اؤر بیڈ پر چت لٹا دیا. ان دونوں گوری ٹانگوں کو خوب پھیلا دیا تاکہ ان کی گلابی چوت میرے سامنے کھل جائے اور مجھے ان کی چوت کو چاٹنے میں ذرا بھی دقت نہ ہو. وہ پھر سے میرے لنڈ کو اپنے ہاتھ سے پکڑ کر آگے پیچھے ہلانے لگی. ان کے یہ کرنے سے میرا لنڈ پھر سے کھڑا ہونے لگا. میں نے ان کی نشیلی چوت کو چاٹ کر اپنے تھوک سے صاف کیا. ویسے ان کی چوت بہت مکھن سی ملائم اور ململ سی چکنی تھی. وہ گرم - گرم ملائی سے بھرپور چوت مجھے اب جنت سی لگ رہی تھی جس کو اب چودنا بہت ضروری ہو گیا تھا. میرے لپ - لپ کر ان کی چوت کو چاٹنے سے وہ اپنے منہ سے سی ... سی ... اوووو ... اههههه کر رہی تھی، بولی - میرے راجا، جلدی سے اپنا سات انچ کا شعر میری محبت کی غار میں گھسا دو ، جلدی سے اس کی چوت کی کھجلی شاںت کرو. بہت تڑپ رہی ہوں.

میں نے جلدی سے ان کی گوری ماںسل جاںگھوں کو دور دور کیا اور لؤڑا پکڑ کر اپنا سپاڑا چوت کے منہ پر ٹکا کر سہلایا. پھر ایک دھیرے سے زور لگایا جس سے لنڈ كھچ کی آواز سے اندر گرم گرم چوت میں اندر تک سما گیا. وہ آنکھیں بند کر مست ہونے لگی.

میں بولا - نشا تم بہت مست ہو.

وہ مسکرا دی. میں نے اپنے لنڈ کی رفتار بڑھا دی. لنڈ جلدی جلدی اندر - باہر چلنے لگا. لنڈ پورے زور سے اندر باہر آ جا رہا تھا جس سے نشا کی چوچیاں بھی ہل رہی تھیں. دونوں بوبس کو میں نے ہاتھ میں بھر کر مسلنا شروع کر دیا تھا اور ان کے نپل بھی اپنے ہوںٹھوں میں چوسنے لگا. نشا کی جوانی لوٹ کر دس منٹ تک گرم لنڈ راڈ سا اسکی بر کو پھاڑتا رہا. پھر میں نے اس کی چوت سے لنڈ باہر نکالا اور اپنی گرم منی اسکی چوت کے اوپر اور ناف میں ڈال دیا.

اب وہ خاموش ہو چکی تھی اور میری پہلے پیار کی کلاس ایک گھنٹے میں ختم ہوئی. جنس کی اس کلاس میں مجھ کو پورا مزا ملا.

Comments

  1. Indian College Girls Pissing Hidden Cam Video in College Hostel Toilets


    Sexy Indian Slut Arpana Sucks And Fucks Some Cock Video


    Indian Girl Night Club Sex Party Group Sex


    Desi Indian Couple Fuck in Hotel Full Hidden Cam Sex Scandal


    Very Beautiful Desi School Girl Nude Image

    Indian Boy Lucky Blowjob By Mature Aunty

    Indian Porn Star Priya Anjali Rai Group Sex With Son & Son Friends

    Drunks Desi Girl Raped By Bigger-man

    Kolkata Bengali Bhabhi Juicy Boobs Share

    Mallu Indian Bhabhi Big Boobs Fuck Video

    Indian Mom & Daughter Forced Raped By RobberIndian College Girls Pissing Hidden Cam Video in College Hostel Toilets


    Sexy Indian Slut Arpana Sucks And Fucks Some Cock Video


    Indian Girl Night Club Sex Party Group Sex


    Desi Indian Couple Fuck in Hotel Full Hidden Cam Sex Scandal


    Very Beautiful Desi School Girl Nude Image

    Indian Boy Lucky Blowjob By Mature Aunty

    Indian Porn Star Priya Anjali Rai Group Sex With Son & Son Friends

    Drunks Desi Girl Raped By Bigger-man

    Kolkata Bengali Bhabhi Juicy Boobs Share

    Mallu Indian Bhabhi Big Boobs Fuck Video

    Indian Mom & Daughter Forced Raped By Robber

    Sunny Leone Nude Wallpapers & Sex Video Download

    Cute Japanese School Girl Punished Fuck By Teacher

    South Indian Busty Porn-star Manali Ghosh Double Penetration Sex For Money

    Tamil Mallu Housewife Bhabhi Big Dirty Ass Ready For Best Fuck

    Bengali Actress Rituparna Sengupta Leaked Nude Photos

    Grogeous Desi Pussy Want Big Dick For Great Sex

    Desi Indian Aunty Ass Fuck By Devar

    Desi College Girl Laila Fucked By Her Cousin

    Indian Desi College Girl Homemade Sex Clip Leaked MMS
















    ………… /´¯/)
    ……….,/¯../ /
    ………/…./ /
    …./´¯/’…’/´¯¯.`•¸
    /’/…/…./…..:^.¨¯\
    (‘(…´…´…. ¯_/’…’/
    \……………..’…../
    ..\’…\………. _.•´
    …\…………..(
    ….\…………..\.

    ReplyDelete
    Replies
  2. Agar koi girls ya aunties doctor teacher 14 sal say 40 sal tak mujh se apni felling shere karna chahti hon ya
    Good Friendship....Love and Romantic Chat Phone sex fun masti Ya Real sex enjoye karna chahti hon to contact karin jas ka or keow boy friend na ho akali ho only female jo humrazz ho 03100056201 call or sms jo apni marzi say phodi dana chati ho 03100056201

    ReplyDelete

Post a Comment

Popular posts from this blog

Meri 2 sagi choti behne

Ye meri zindagi ki bilkul sachi dastanhe. Shayad kuchlogon ko yaqeen na aaye magar ye sab sach he.Mera namahsan he or mere ghar me ham 5 loghain. Mere abbu, ammi or do behne. Aik baray bahi ki shadi ho chuki hai or wo apni biwi kay sath alag ratay hain. Abbu ek bank me manager hainjab keh ammi school teacher hian. Meri umar 22 saal he jab ke dono behne mujh se choti hian. Ek areeba 18saal ki or dossri naila 19 saal ki he. Mujhe college k zamane se hi blue prints film dekhne ka shoq tha or me who wali blue prints zada dekhta tha jis me teen ager larkyan hotin thin or apne jism k her hole me sex ka maza letin thin. Mujhe choti choti larkyon k chootar, un k chotay chotay doodh gulabi nipples k saath, unki gulabi choot or chootaron k bech ki tight si darar (lakeer) buhat excitekerti thi or me esi films dekh k buhat hot hojatatha or buhat zada mani nikalta tha. Meri behan areeba jo k 18 saal ki hi 11th class me thi jab k naila jo k 19 ki thi unsay abhi inter k paper dye the or aj kal ghar …

Incest With Sons

Incest With Sons Helo friends mera nam saima khan ha. Mera figure kafi acha ha boobs 38 waist 32 ass 42 aur rang gora ha height 6 weight 73 long hair black eyes.Ye meri

true story ha.Meri family main mera husband 48 mera 2 sons parveez19 aur atif 15 hain.Mera thaluk ik high class family say ha.Mera hubby aik business man

ha aur har waqt apnay business kay kam karta ratha ha aur gahar ka bilkul khayal nahi raktha vo zaida tar business toures par he ratha ha.Jis ki waja say

meri sex ki piyas zaida barh gai ha vo jab koi 2 ya 4 months bahad sex karta ha to khud to farag ho jata ha aur mujhae garam kar kay chor deta ha.Main to

ab ungli par guzara karti thi par ik sham ko main jab main bathroom ja rahi thi to main nay parveez kay room ki window say dekha kay vo nanga tha aur

muth mar raha tha jab main nay ghor say dekha to main heran rha gai us kay lun ka size koi 9 ya 10 inch tha aur kafi mota tha aur oil ki waja say vo

chamak be raha tha kyun kay vo oil laga kar muth mar raha tha.
Main ye dekh k…

Maa beta aur bahu

Hi I am Huma . I hope you will like this hot ******uous threesome of mother, son and bahu. Matherchod gets lucky and fuckes his mom and wife. Main Amit apni kahani ko aage badhane ke liya hazir hoon. Ussraat apni maa Suman ki chudayi karne ke baad mein agle din subah deri se utha jab Suman naha dho kar rasoi meinnashta bana rahi thi. Ussne ek cotton ki patli see kamiz pehni hui thi aur kuchh nahin pehna hua tha. Maine peechhe se ja kar usko apni bahon mein le liya aur usski chuchi ko bheenchna shuru kar diya. Vo chihunk padi," Aree yeh kia? Subah uthate hi maa ko dabochliya bete? Abhi naha to lo. Kia maa itni pasand aa gayi hai. Aajto main teri biwi ko bhi ghar la rahi hoon. Fir kaise chale ga jabdo do auraton se jujhna pade ga. Kahin Soni ko shak na pad jaye ki hum dono maa bete mein jo kuchh chal raha hai. Sach Amit ab main tere lund ke bina nahin reh sakti. Main ab kasie bardashat kar sakun gi ki tu kissi aur ke ho. Sach mera dil tujhe kissi ke saath hare karne ko nahin manta …