Skip to main content

Posts

Showing posts from June, 2016

urdu font sexy story free

یہ گذشتہ سال نومبر کی بات ہے جب میں مجھے اپنے دفتر میں بہت زیادہ کام تھا اور کام کرتے کرتے مجھے رات کے تقریباً گیارہ بج گئے اور کام ابھی تک ختم نہیں ہوا تھا میں بہت تھک چکا تھا اور میرے کندھوں میں بھی تھکن کی وجہ سے درد شروع ہوگیا تھا میں نے فیصلہ کیا کہ ابھی میں گھر جاکر آرام کروں اور کل صبح وقتی دفتر آکر باقی کے کام کو نمٹا لوں میں یہ سوچ کر اٹھا اور دفتر کے باہر کھڑی گاڑی میں بیٹھ کر گھر کو چل دیا نہر والی سڑک پر راستے میں جیل روڈ انڈر پاس پر ٹریفک کافی پھنسی ہوئی تھی جس پر میں نے انڈر پاس کی بجائے گاڑی اوپر والی روڈ پر ڈال دی ٹریفک سگنل بند تھا میں نے گاڑی روک دی سامنے سے گزرنے والی ٹریفک کو دیکھتے ہوئے سگنل کھلنے کا انتظار کرنے لگا کچھ دیر کے بعد اشارہ کھلا اور میں نے گاڑی چلا دی سٹرک کے اس بس سٹاپ پر دو تین سواریاں بس کے انتظار میں کھڑی تھیں جبکہ ان سےتھوڑا ہٹ کرایک چادر میں لپٹی ہوئی لڑکی کھڑی ہوئی تھی جس کو دیکھ کر میری رال ٹپکنے لگی میں نے سوچا یہ کوئی پروفیشنل لڑکی کھڑی ہے چلو آج اس کے ساتھ مستی ہی کی جائے میں نے اس کے بالکل پاس جاکر گاڑی کھڑی کردی اور فرنٹ کا دروازہ کھول د…

urdu font sexy story free

یہ گذشتہ سال نومبر کی بات ہے جب میں مجھے اپنے دفتر میں بہت زیادہ کام تھا اور کام کرتے کرتے مجھے رات کے تقریباً گیارہ بج گئے اور کام ابھی تک ختم نہیں ہوا تھا میں بہت تھک چکا تھا اور میرے کندھوں میں بھی تھکن کی وجہ سے درد شروع ہوگیا تھا میں نے فیصلہ کیا کہ ابھی میں گھر جاکر آرام کروں اور کل صبح وقتی دفتر آکر باقی کے کام کو نمٹا لوں میں یہ سوچ کر اٹھا اور دفتر کے باہر کھڑی گاڑی میں بیٹھ کر گھر کو چل دیا نہر والی سڑک پر راستے میں جیل روڈ انڈر پاس پر ٹریفک کافی پھنسی ہوئی تھی جس پر میں نے انڈر پاس کی بجائے گاڑی اوپر والی روڈ پر ڈال دی ٹریفک سگنل بند تھا میں نے گاڑی روک دی سامنے سے گزرنے والی ٹریفک کو دیکھتے ہوئے سگنل کھلنے کا انتظار کرنے لگا کچھ دیر کے بعد اشارہ کھلا اور میں نے گاڑی چلا دی سٹرک کے اس بس سٹاپ پر دو تین سواریاں بس کے انتظار میں کھڑی تھیں جبکہ ان سےتھوڑا ہٹ کرایک چادر میں لپٹی ہوئی لڑکی کھڑی ہوئی تھی جس کو دیکھ کر میری رال ٹپکنے لگی میں نے سوچا یہ کوئی پروفیشنل لڑکی کھڑی ہے چلو آج اس کے ساتھ مستی ہی کی جائے میں نے اس کے بالکل پاس جاکر گاڑی کھڑی کردی اور فرنٹ کا دروازہ کھول د…

chudai ki rat sexy desi hindi chudai story best phudi kahani

Pyare readers Ek bar muze sarkari kam ke silsile 2 mahine ke liye Kolkata jana pada. Hamare pados me mera bis varsiya dost rahata hai aur mul roop se Kolkata niwasi hai usaka pariwar Kolkata me rahata hai. Usne kaha Dinu agar tumahare taharne ka intajam na hosaka toh tum mere Ghar me paying guest bankar raha sakte ho. Wahan meri Dadi, Maa aur bahan “Sudha” rahati hai.

Guruwar ki subah main Geetangali Train se rawana huwa, Dost ne apni Dadi, maa aur bahan ke liye kuch sariyan bheji thi. Sukrawar ki raat main kolkatta pahucha aur direct dost ke ghar gaya. Dost ne pahale se hi mere bare me phon par bata diya tha isliye koi katnai nahi huyee balki wo log bahut khus huwe. Aur sandar swagat karte huwe mere taharne ka intajam kiya. Unka 2 kamro ka makan tha. Ek kamara me unki chhoti se rasoi thi dusara bada kamara tha. Maa aur bahan ek garment factory me kam karti hai.

Dost ki maa ka nam Parwati hai wo 35+ varsiya sudol sanwali mahila hai. Uski bahan ka Nam Sudha hai wo 22 varsiya tandurast ma…

chudai ka bara maja aya jab naukarani ko choda urdu hindi sexy chudai desi kahani.netblogspot chudai istory story

Doston, ladki ko seduce karke chodne mein bada maza aata hai. Bas seduce karne ka tareeka theek hona chahiye. Maine apni ghar ki naukrani ko aise hi seduce kar khoob choda. Ab suno uski dastaan. Mera naam hai sahil.mei lucknow u.p ka hu Mere ghar mein ul zalool naukraniyon ke kaafi arse baad ek bahut hi sundar aur sexy naukrani kaam par lagee. 22-23 saal ki umar hogi. Sawlaan sa rang tha. Medium height ki aur sudaul badan, figure uska raha hoga 33-26-34. Shaadi shuda thi. Uska pati kitna kismat wala tha, saala khub chodta hoga.

Boobs yaani chuchiyan aisi ki bas daba hi dalo. Blouse mein samata hi nahi tha. Kitni bhi saari se woh dhakti, idhar udhar se blouse se ubharte hue uski chuchiyan dikh hi jaati thi. Jharu lagate hue, jab vah jhukti, tab blouse ke upar se chuchiyon ke beech ki darar ko chupa na sakti. Ek din jab maine uski is darar ko tirchi nazar se dekha to pata laga ki usne bra to pehna hi nahi tha. Kahan se pahanti, bra par bekar paise kyon kharch kiye jaiye. Jab voh thumakti…